Pak Urdu Installer

اللہ کے نام سے ابتدا، جو مہربان اور نہایت رحم کرنے والا ہے، وہ دلوں کے بھید خوب جانتا ہے۔

دو سال قبل آج ہی کے دن آپ سب کا ”پاک اردو انسٹالر“ ریلیز ہوا۔ تب کئی دن رات کام کرنے کے بعد 15 جون 2011ء کی صبح 7 بج کر 27 منٹ پر جب بلاگ پوسٹ شائع کی تو مجھے اندازہ نہیں تھا کہ یہ کتنی اہم چیز ریلیز کر رہا ہوں۔ جیسے دیگر اردو پروجیکٹ شائع کرتا بالکل ایسے ہی یہ بھی کر دیا۔ لیکن جلد ہی پاک اردو انسٹالر استعمال کرنے والوں اور دوست احباب کی طرف سے حوصلہ افزائی دیکھ کر خوشی ہوئی اور اللہ کا لاکھ لاکھ شکر ادا کیا کہ اس نے یہ کام میرے ہاتھوں کروایا۔

پاک اردو انسٹالر بناتے ہوئے مجھے امید تھی کہ یہ کئی لوگوں کے کام آئے گا لیکن جو صورت حال آج ہے اس کا کبھی سوچا بھی نہیں تھا کہ اتنی بڑی تعداد پاک اردو انسٹالر استعمال کرے گی اور یہ اردو کی ترقی میں اہم کردار ادا کرے گا۔ جس دن پاک اردو انسٹالر ریلیز ہوا تو پہلے چوبیس گھنٹوں میں تقریباً سو کے قریب ڈاؤن لوڈ ہوا۔ اس کے بعد روزانہ ڈاؤن لوڈ کی اوسط تعداد 30 سے 40 تک رہی، جو آہستہ آہستہ بڑھتی رہی اور پانچ مہینوں میں 80 سے 100 تک پہنچ گئی۔ دوست احباب اور اردو سے پیار کرنے والوں نے اس کی خوب تشہیر کی اور اس کا پھیلاؤ دن بدن بڑھتا گیا۔ آج کل روزانہ ڈاؤن لوڈ کی اوسط تعداد 400 سے 500 تک ہے اور دن بدن اس میں اضافہ ہو رہا ہے۔ ان دو سال میں پاک اردو انسٹالر کل ایک لاکھ باسٹھ ہزار (162,000) سے زائد مرتبہ ڈاؤن لوڈ کیا گیا۔

یہ سارے اعدادوشمار صرف ایم بلال ایم ڈاٹ کام کے ہیں۔ باقی لوگوں نے جو اِدھراُدھر اپلوڈ کر دیا تھا اس کے متعلق کچھ نہیں کہہ سکتا۔ ویسے یار لوگوں کو بہت کہا کہ اِدھراُدھر اپلوڈ نہ کرو بلکہ ایک ہی جگہ کا لنک دو تاکہ ایک تو اعدادوشمار کا ٹھیک اندازہ ہو سکے اور دوسرا جب بھی کوئی ڈاؤن لوڈ کرے تو اسے تازہ ترین ورژن ہی ملے کیونکہ جو اِدھراُدھر اپلوڈ ہے اسے لوگ پابندی سے اپڈیٹ نہیں کر پاتے۔ خیر کئی لوگ پھر بھی باز نہ آئے۔ آپ کو یہ جان کر حیرانی ہو گی کہ کئی لوگوں نے پاک اردو انسٹالر اپنے نام سے اپلوڈ کر کے واہ واہ سمیٹی۔ حتی کہ ایک دو جگہوں پر تو میں بھی انہیں داد دے آیا۔ :-D خیر ایسے لوگ ہر جگہ ہوتے ہیں اور اس طرح کی چوری ہونا ہمارے ہاں کوئی بڑی بات نہیں۔ بہرحال پاک اردو انسٹالر اپنے آغاز سے ہی سافٹ ویئرز کی مشہورِزمانہ ویب سائیٹس سی نیٹ اور سافٹ پیڈیا پر بھی دستیاب ہے۔ مزید اس کی آسان ترین فراہمی کے لئے خاص طور پر ڈاؤن لوڈنگ کا صفحہ بنایا گیا۔ جس پر چھ کے قریب مختلف لنکس دیئے گئے تاکہ اگر کسی وجہ سے ایک لنک کام نہ کر رہا ہو تو کسی دوسرے سے ڈاؤن لوڈ کیا جا سکے۔ اگر تمام لنکس میں مسئلہ جو کہ نہ ہونے کے برابر ہے، لیکن احتیاط کے طور پر ایسا ای میل نظام بنایا کہ اگر تمام کے تمام لنکس میں مسئلہ ہو تو جس کو مسئلہ ہے وہ ای میل بھیج دے اور اسے پاک اردو انسٹالر بذریعہ ای میل بھیجا جا سکے۔ اس کے علاوہ اسے ہر انداز میں پیش کیا گیا۔ جیسے تصویری اردو، انگریزی اور ویڈیو۔ تاکہ کوئی جس انداز میں بھی اردو لکھنے کے متعلق تلاش کرے تو اسے مل سکے۔ پاک اردو انسٹالر نے اتنی مقبولیت حاصل کی کہ 2012ء کا تقریباً سارا سال گوگل پاکستان تلاش میں اردو کے متعلق مختلف ”کی ورڈز“ پر پاک اردو انسٹالر کی Suggestion دیتا رہا۔ جیسے ”urdu in“ اور ”pakistan urdu“ وغیرہ وغیرہ لکھنے پر ”Pak Urdu Installer“ کا مشورہ دے دیتا۔

بہت زیادہ لوگوں نے اردو کی محبت میں پاک اردو انسٹالر کو اپنا سمجھ کر خوب تشہیر کی۔ حقیقت بھی یہی ہے کہ یہ سب اردو والوں کا ہے۔ اگر میں نے تشہیری مہم کے لئے کہیں اپنی کوئی رائے دی تو صرف اس لئے دی کہ تشہیر اچھے طریقے سے ہو اور لمبے عرصے تک کارآمد رہے۔ بہرحال پاک اردو انسٹالر کی تشہیر کے لئے کئی طریقے اپنائے گئے۔ سب سے پہلے تو پاک اردو انسٹالر کے بینر بنائے تاکہ مختلف ویب سائیٹس اور بلاگز کے مالکان آسانی سے بینر لگا کر اردو کی ترویج میں حصہ لے سکیں۔ اردو بلاگستان کی اکثریت کو مبارکباد پیش کرتا ہوں کہ جنہوں نے اس کام میں بڑھ چڑھ کر حصّہ لیا اور تشہیر کی ”آخیر“ کر دی۔ جنہوں نے بینر لگائے ان کی حوصلہ افزائی کے لئے پاک اردو انسٹالر میں ان کے لنک شامل کیے گئے۔ یوں پاک اردو انسٹالر جس جس تک پہنچتا ہے اس تک وہ لنک بھی پہنچ جاتے ہیں۔ اب بھی جو بینر لگا کر اطلاع دیتا ہے اس کا لنک بھی شامل کر دیا جاتا ہے۔ جو لنک شامل ہو چکے ہیں وہ آپ بلاگرز فہرست میں دیکھ سکتے ہیں۔ اگر کسی نے بینر لگایا ہوا ہے اور اس کا لنک اس فہرست میں شامل نہیں تو برائے مہربانی اطلاع کریں۔

پتہ نہیں مجھے پاک اردو انسٹالر کی تشہیر کرنے والوں کا شکریہ ادا کرنا چاہئے یا یہ ان کا فرض تھا اور مجھے انہیں مبارکباد دینی چاہئے۔ بہرحال سب سے پہلے ابوشامل کا ذکر کرنا چاہوں گا جنہوں نے باقاعدہ سی ڈیز بنا کر مفت تقسیم کیں، ایکسپریس کے سنڈے میگزین میں بھی پاک اردو انسٹالر کا ذکر کروایا اور وقتاًفوقتاً نہایت قیمتی مشورے بھی دیئے۔ ایک دن اچانک ڈاؤن لوڈنگ کی تعداد بڑھنے لگی۔ میں حیران ہو گیا کہ یہ اچانک ایک ساتھ اردو والوں کو کہاں سے پاک اردو انسٹالر کا خیال آ گیا۔ سوچا ضرور کہیں کوئی اردو کا عاشق تشہیر کر رہا ہو گا۔ دوسرے دن معلوم ہوا کہ وہ جناب عامر شہزاد تھے جنہوں نے ایک رات میں تقریباً ایک ہزار لوگوں تک پاک اردو انسٹالر پہنچا دیا۔ جزاک اللہ۔۔۔ مزید محمد اسد، یاسر عمران مرزا اور میرے ہم نام محمد بلال خان ہیں جنہوں نے وقتاً فوقتاً سوشل میڈیا پر پاک اردو انسٹالر کی تشہیر کے لئے بینر بنائے۔ ان کے علاوہ بہت زیادہ لوگ ہیں جنہوں نے پاک اردو انسٹالر کو سوشل میڈیا پر ٹویٹ اور شیئر کیا۔ فیس بک کے کئی بڑے بڑے پیجز نے پاک اردو انسٹالر شیئر کیا جن میں سے اپنی زبان اردو، ڈنگہ لیکس اور اشفاق احمد ابھی ذہن میں ہیں۔ یہاں عمر بنگش کا ذکر کرنا چاہوں گا کیونکہ میری معلومات کے مطابق یہ واحد اردو بلاگر ہیں جنہوں نے اپنے بلاگ کے ہیڈر میں پاک اردو انسٹالر کو جگہ دی ہے۔

پاک اردو انسٹالر صرف پاکستان میں ہی نہیں بلکہ دنیا کے کئی ممالک میں استعمال ہو رہا ہے۔ ان میں بالترتیب ہندوستان، سعودی عرب، امریکہ، متحدہ عرب امارات، برطانیہ اور کینیڈا وغیرہ قابل ذکر ہیں۔ مانچسٹر یونیورسٹی میں اردو کے استاد شیراز علی نے برطانیہ میں پاک اردو انسٹالر کی خوب تشہیر کی۔ انہوں نے مانچسٹر یونیورسٹی کے ساتھ ساتھ کئی دوسرے اداروں تک پاک اردو انسٹالر پہنچایا اور کمپیوٹر پر اردو لکھنے کی باقاعدہ تربیت دی۔ اسی طرح دیگر ممالک میں بھی اردو سے محبت کرنے والے اردو کی ترویج کے لئے کوشاں ہیں۔ مزید پاکستان کے مشہور اردو رسالے ”گلوبل سائنس“ کا ذکر کرنا چاہوں گا جنہوں نے اپنے ایک شمارے میں پاک اردو انسٹالر کو سرورق پر جگہ دی۔ میں ہر اس اس بندے کا شکریہ ادا کرنا چاہتا ہوں جس نے اپنی ویب سائیٹ، بلاگ، سوشل میڈیا یا کسی بھی حوالے سے پاک اردو انسٹالر کی تشہیر کی۔ اس تشہیر کا نتیجہ آپ لوگوں کے سامنے ہے کہ آج کتنی بڑی تعداد اردو لکھ رہی ہے۔ پاک اردو انسٹالر کی تشہیر کرنے والوں کی تعداد بہت زیادہ ہے۔ میں ان سب سے معذرت چاہتا ہوں کہ ہر ایک کا فرداً فرداً ذکر نہیں کر پا رہا۔ جن کا نام ابھی ذہن میں نہیں رہا برائے مہربانی وہ ضرور یاددہانی کروائیں۔

گو کہ اردو کا دم بھرنے والے کئی ”بڑے لوگوں“ اور اردو فورمز پر حیرانی ہوئی کہ وہ جس حد تک اردو لکھنے کی تشہیر میں اپنا کردار ادا کر سکتے تھے اتنا انہوں نے کیا نہیں، لیکن ایسی ساری حیرانیاں پس پشت پڑ گئیں جب اردو کی تشہیر کرنے والوں نے بے لوث جذبہ دیکھایا۔ دوستوں کی تشہیری مہم کے دوران ایسے ایسے دن بھی آئے جب پاک اردو انسٹالر ایک دن میں چھ ہزار سے زائد مرتبہ ڈاؤن لوڈ کیا گیا۔ اگر آپ بھی اردو کی ترویج میں حصہ لیتے ہوئے پاک اردو انسٹالر کی تشہیر کرنا چاہتے ہیں تو ویب سائیٹ اور بلاگ پر لگانے کے بینر آپ کو یہاں سے مل جائیں گے۔ اس کے علاوہ فیس بک وغیرہ پر شیئر کرنے والے مزاحیہ، سنجیدہ اور معلوماتی بینر اس لنک پر موجود ہیں۔ مزید اردو لکھنے کی تفصیلی مگر چھوٹی سی معلوماتی ویڈیو بھی تیار کی ہوئی ہے۔

دوستو! ہمارا سفر ختم نہیں ہوا بلکہ ابھی بہت کام کرنا ہے۔ حوصلہ رکھو اور چلتے رہو۔ ان شاء اللہ کامیابی نصیب ہو گی۔